مئی 15, 2021

ڈیلی سویل۔۔ زمیں زاد کی خبر

Daily Swail-Native News Narrative

(210105) -- NICE (FRANCE), Jan. 5, 2021 (Xinhua) -- A woman receives a COVID-19 vaccine during a vaccination campaign for healthcare professionals in Nice, southern France, on Jan. 5, 2021. France will speed up its vaccination campaign against the coronavirus, said Health Minister Olivier Veran on Monday when visiting a newly set up vaccination center at a Paris hospital in response to mounting criticism at the slowness of the rollout in the country. (Photo by Serge Haouzi/Xinhua)

پچاس لاکھ امریکی کرونا ویکسین کی دوسری خوراک سےگریزاں

چند شہریوں کا خیال ہے کہ وہ ویکسین کی پہلی خوراک لینے کے بعد بالکل ٹھیک ہوچکے ہیں

غریب ممالک میں عوام کرونا سے بچاؤ کی ویکسین کو ترس رہے ہیں جبکہ امریکا میں 50 لاکھ شہریوں نے اب تک ویکسین کی دوسری خوراک نہیں لی ہے۔

کرونا کی عالمی وبا کی پہلی لہر نے امریکا میں خوب تباہی مچائی تھی۔ نیویارک کے اسپتالوں میں بھی مریضوں کے لیے بستر کم پڑگئے تھے۔ قبرستانوں میں جگہ ملنا مشکل ہو رہی تھی۔

خوف کا یہ عالم تھا کہ جیسے ہی ملک میں وبا سے بچاؤ کی ویکسین آئی لوگوں نے تیزی سے لگوانا شروع کردی۔ 50 لاکھ سے زیادہ امریکی شہریوں نے فائزر اور موڈرنا ویکسین کی پہلی خوراک لے لی۔

پچھلے سال کے مقابلے امریکا میں اب حالات کچھ قابو میں آئے ہیں

لیکن پھر بھی یومیہ 40 سے 50 ہزار کرونا کے کیسز رپورٹ ہورہے ہیں۔ اس سنگین صورتحال میں امریکی عوام لاپرواہی کا ثبوت دے رہے ہیں۔

ویکسین کی پہلی خوراک کے بعد 9 اپریل تک 50 لاکھ شہریوں کو دوسری خوراک لگائی جانی تھی

جوکہ نہیں لگ پائی کیوں کہ اکثریت یہ سمجھتی ہے کہ اُنہیں اب اس کی ضرورت نہیں ہے۔

%d bloggers like this: